بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

عَمَّ يَتَسَاءَلُونَ ﴿1﴾ عَنِ النَّبَإِ الْعَظِيمِ ﴿2﴾ الَّذِي هُمْ فِيهِ مُخْتَلِفُونَ ﴿3﴾ كَلَّا سَيَعْلَمُونَ ﴿4﴾ ثُمَّ كَلَّا سَيَعْلَمُونَ ﴿5﴾ أَلَمْ نَجْعَلِ الْأَرْضَ مِهَادًا ﴿6﴾ وَالْجِبَالَ أَوْتَادًا ﴿7﴾ وَخَلَقْنَاكُمْ أَزْوَاجًا ﴿8﴾ وَجَعَلْنَا نَوْمَكُمْ سُبَاتًا ﴿9﴾ وَجَعَلْنَا اللَّيْلَ لِبَاسًا ﴿10﴾ وَجَعَلْنَا النَّهَارَ مَعَاشًا ﴿11﴾ وَبَنَيْنَا فَوْقَكُمْ سَبْعًا شِدَادًا ﴿12﴾ وَجَعَلْنَا سِرَاجًا وَهَّاجًا ﴿13﴾ وَأَنْزَلْنَا مِنَ الْمُعْصِرَاتِ مَاءً ثَجَّاجًا ﴿14﴾ لِنُخْرِجَ بِهِ حَبًّا وَنَبَاتًا ﴿15﴾ وَجَنَّاتٍ أَلْفَافًا ﴿16﴾ إِنَّ يَوْمَ الْفَصْلِ كَانَ مِيقَاتًا ﴿17﴾ يَوْمَ يُنْفَخُ فِي الصُّورِ فَتَأْتُونَ أَفْوَاجًا ﴿18﴾ وَفُتِحَتِ السَّمَاءُ فَكَانَتْ أَبْوَابًا ﴿19﴾ وَسُيِّرَتِ الْجِبَالُ فَكَانَتْ سَرَابًا ﴿20﴾ إِنَّ جَهَنَّمَ كَانَتْ مِرْصَادًا ﴿21﴾ لِلطَّاغِينَ مَآبًا ﴿22﴾ لَابِثِينَ فِيهَا أَحْقَابًا ﴿23﴾ لَا يَذُوقُونَ فِيهَا بَرْدًا وَلَا شَرَابًا ﴿24﴾ إِلَّا حَمِيمًا وَغَسَّاقًا ﴿25﴾ جَزَاءً وِفَاقًا ﴿26﴾ إِنَّهُمْ كَانُوا لَا يَرْجُونَ حِسَابًا ﴿27﴾ وَكَذَّبُوا بِآيَاتِنَا كِذَّابًا ﴿28﴾ وَكُلَّ شَيْءٍ أَحْصَيْنَاهُ كِتَابًا ﴿29﴾ فَذُوقُوا فَلَنْ نَزِيدَكُمْ إِلَّا عَذَابًا ﴿30﴾ إِنَّ لِلْمُتَّقِينَ مَفَازًا ﴿31﴾ حَدَائِقَ وَأَعْنَابًا ﴿32﴾ وَكَوَاعِبَ أَتْرَابًا ﴿33﴾ وَكَأْسًا دِهَاقًا ﴿34﴾ لَا يَسْمَعُونَ فِيهَا لَغْوًا وَلَا كِذَّابًا ﴿35﴾ جَزَاءً مِنْ رَبِّكَ عَطَاءً حِسَابًا ﴿36﴾ رَبِّ السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ وَمَا بَيْنَهُمَا الرَّحْمَٰنِ ۖ لَا يَمْلِكُونَ مِنْهُ خِطَابًا ﴿37﴾ يَوْمَ يَقُومُ الرُّوحُ وَالْمَلَائِكَةُ صَفًّا ۖ لَا يَتَكَلَّمُونَ إِلَّا مَنْ أَذِنَ لَهُ الرَّحْمَٰنُ وَقَالَ صَوَابًا ﴿38﴾ ذَٰلِكَ الْيَوْمُ الْحَقُّ ۖ فَمَنْ شَاءَ اتَّخَذَ إِلَىٰ رَبِّهِ مَآبًا ﴿39﴾ إِنَّا أَنْذَرْنَاكُمْ عَذَابًا قَرِيبًا يَوْمَ يَنْظُرُ الْمَرْءُ مَا قَدَّمَتْ يَدَاهُ وَيَقُولُ الْكَافِرُ يَا لَيْتَنِي كُنْتُ تُرَابًا ﴿40﴾

عظیم اور دائمی رحمتوں والے خدا کے نام سے

یہ لوگ آپس میں کس چیز کے بارے میں سوال کر رہے ہیں ﴿1﴾ بہت بڑی خبر کے بارے میں ﴿2﴾ جس کے بارے میں ان میں اختلاف ہے ﴿3﴾ کچھ نہیں عنقریب انہیں معلوم ہو جائے گا ﴿4﴾ اور خوب معلوم ہو جائے گا ﴿5﴾ کیا ہم نے زمین کا فرش نہیں بنایا ہے ﴿6﴾ اور پہاڑوں کی میخیں نہیں نصب کی ہیں ﴿7﴾ اور ہم ہی نے تم کو جوڑا بنایا ہے ﴿8﴾ اور تمہاری نیند کو آرام کا سامان قرار دیا ہے ﴿9﴾ اور رات کو پردہ پوش بنایا ہے ﴿10﴾ اور دن کو وقت معاش قرار دیا ہے ﴿11﴾ اور تمہارے سروں پر سات مضبوط آسمان بنائے ہیں ﴿12﴾ اور ایک بھڑکتا ہوا چراغ بنایا ہے ﴿13﴾ اور بادلوں میں سے موسلا دھار پانی برسایا ہے ﴿14﴾ تاکہ اس کے ذریعہ دانے اور گھاس برآمد کریں ﴿15﴾ اور گھنے گھنے باغات پیدا کریں ﴿16﴾ بیشک فیصلہ کا دن معین ہے ﴿17﴾ جس دن صور پھونکا جائے گا اور تم سب فوج در فوج آؤ گے ﴿18﴾ اور آسمان کے راستے کھول دیئے جائیں گے اور دروازے بن جائیں گے ﴿19﴾ اور پہاڑوں کو جگہ سے حرکت دے دی جائے گی اور وہ ریت جیسے ہو جائیں گے ﴿20﴾ بیشک جہنم ان کی گھات میں ہے ﴿21﴾ وہ سرکشوں کا آخری ٹھکانا ہے ﴿22﴾ اس میں وہ مدتوں رہیں گے ﴿23﴾ نہ ٹھنڈک کا مزہ چکھ سکیں گے اور نہ کسی پینے کی چیز کا ﴿24﴾ علاوہ کھولتے پانی اور پیپ کے ﴿25﴾ یہ ان کے اعمال کا مکمل بدلہ ہے ﴿26﴾ یہ لوگ حساب و کتاب کی امید ہی نہیں رکھتے تھے ﴿27﴾ اور انہوں نے ہماری آیات کی باقاعدہ تکذیب کی ہے ﴿28﴾ اور ہم نے ہر شے کو اپنی کتاب میں جمع کر لیا ہے ﴿29﴾ اب تم اپنے اعمال کا مزہ چکھو اور ہم عذاب کے علاوہ کوئی اضافہ نہیں کر سکتے ﴿30﴾ بیشک صاحبانِ تقویٰ کے لئے کامیابی کی منزل ہے ﴿31﴾ باغات ہیں اور انگور ﴿32﴾ نوخیز دوشیزائیں ہیں اور سب ہمسن ﴿33﴾ اور چھلکتے ہوئے پیمانے ﴿34﴾ وہاں نہ کوئی لغو بات سنیں گے نہ گناہ ﴿35﴾ یہ تمہارے رب کی طرف سے حساب کی ہوئی عطا ہے اور تمہارے اعمال کی جزا ﴿36﴾ وہ آسمان و زمین اور ان کے مابین کا پروردگار رحمٰن ہے جس کے سامنے کسی کو بات کرنے کا یارا نہیں ہے ﴿37﴾ جس دن روح القدس اور ملائکہ صف بستہ کھڑے ہوں گے اور کوئی بات بھی نہ کر سکے گا علاوہ اس کے جسے رحمٰن اجازت دے دے اور ٹھیک ٹھیک بات کرے ﴿38﴾ یہی برحق دن ہے تو جس کا جی چاہے اپنے رب کی طرف ٹھکانا بنا لے ﴿39﴾ ہم نے تم کو ایک قریبی عذاب سے ڈرایا ہے جس دن انسان اپنے کئے دھرے کو دیکھے گا اور کافر کہے گا کہ اے کاش میں خاک ہو گیا ہوتا ﴿40﴾