بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

أَوْ يَذَّكَّرُ فَتَنْفَعَهُ الذِّكْرَىٰ ﴿4﴾ أَمَّا مَنِ اسْتَغْنَىٰ ﴿5﴾ فَأَنْتَ لَهُ تَصَدَّىٰ ﴿6﴾ وَمَا عَلَيْكَ أَلَّا يَزَّكَّىٰ ﴿7﴾ وَأَمَّا مَنْ جَاءَكَ يَسْعَىٰ ﴿8﴾ وَهُوَ يَخْشَىٰ ﴿9﴾ فَأَنْتَ عَنْهُ تَلَهَّىٰ ﴿10﴾ كَلَّا إِنَّهَا تَذْكِرَةٌ ﴿11﴾ فَمَنْ شَاءَ ذَكَرَهُ ﴿12﴾ فِي صُحُفٍ مُكَرَّمَةٍ ﴿13﴾ مَرْفُوعَةٍ مُطَهَّرَةٍ ﴿14﴾ بِأَيْدِي سَفَرَةٍ ﴿15﴾ كِرَامٍ بَرَرَةٍ ﴿16﴾ قُتِلَ الْإِنْسَانُ مَا أَكْفَرَهُ ﴿17﴾ أَنْ جَاءَهُ الْأَعْمَىٰ ﴿2﴾ وَمَا يُدْرِيكَ لَعَلَّهُ يَزَّكَّىٰ ﴿3﴾ عَبَسَ وَتَوَلَّىٰ ﴿1﴾ مِنْ أَيِّ شَيْءٍ خَلَقَهُ ﴿18﴾ مِنْ نُطْفَةٍ خَلَقَهُ فَقَدَّرَهُ ﴿19﴾ ثُمَّ السَّبِيلَ يَسَّرَهُ ﴿20﴾ ثُمَّ أَمَاتَهُ فَأَقْبَرَهُ ﴿21﴾ ثُمَّ إِذَا شَاءَ أَنْشَرَهُ ﴿22﴾ كَلَّا لَمَّا يَقْضِ مَا أَمَرَهُ ﴿23﴾ فَلْيَنْظُرِ الْإِنْسَانُ إِلَىٰ طَعَامِهِ ﴿24﴾ أَنَّا صَبَبْنَا الْمَاءَ صَبًّا ﴿25﴾ ثُمَّ شَقَقْنَا الْأَرْضَ شَقًّا ﴿26﴾ فَأَنْبَتْنَا فِيهَا حَبًّا ﴿27﴾ وَعِنَبًا وَقَضْبًا ﴿28﴾ وَزَيْتُونًا وَنَخْلًا ﴿29﴾ وَحَدَائِقَ غُلْبًا ﴿30﴾ وَفَاكِهَةً وَأَبًّا ﴿31﴾ مَتَاعًا لَكُمْ وَلِأَنْعَامِكُمْ ﴿32﴾ فَإِذَا جَاءَتِ الصَّاخَّةُ ﴿33﴾ يَوْمَ يَفِرُّ الْمَرْءُ مِنْ أَخِيهِ ﴿34﴾ وَأُمِّهِ وَأَبِيهِ ﴿35﴾ وَصَاحِبَتِهِ وَبَنِيهِ ﴿36﴾ لِكُلِّ امْرِئٍ مِنْهُمْ يَوْمَئِذٍ شَأْنٌ يُغْنِيهِ ﴿37﴾ وُجُوهٌ يَوْمَئِذٍ مُسْفِرَةٌ ﴿38﴾ ضَاحِكَةٌ مُسْتَبْشِرَةٌ ﴿39﴾ وَوُجُوهٌ يَوْمَئِذٍ عَلَيْهَا غَبَرَةٌ ﴿40﴾ تَرْهَقُهَا قَتَرَةٌ ﴿41﴾ أُولَٰئِكَ هُمُ الْكَفَرَةُ الْفَجَرَةُ ﴿42﴾

عظیم اور دائمی رحمتوں والے خدا کے نام سے

یا نصیحت حاصل کر لیتا تو وہ نصیحت ا س کے کام آ جاتی ﴿4﴾ لیکن جو مستغنی بن بیٹھا ہے ﴿5﴾ آپ اس کی فکر میں لگے ہوئے ہیں ﴿6﴾ حالانکہ آپ پر کوئی ذمہ داری نہیں ہے اگر وہ پاکیزہ نہ بھی بنے ﴿7﴾ لیکن جو آپ کے پاس دوڑ کر آیا ہے ﴿8﴾ اور وہ خوف خدا بھی رکھتا ہے ﴿9﴾ آپ اس سے بے رخی کرتے ہیں ﴿10﴾ دیکھئے یہ قرآن ایک نصیحت ہے ﴿11﴾ جس کا جی چاہے قبول کر لے ﴿12﴾ یہ با عزت صحیفوں میں ہے ﴿13﴾ جو بلند و بالا اور پاکیزہ ہے ﴿14﴾ ایسے لکھنے والوں کے ہاتھوں میں ہیں ﴿15﴾ جو محترم اور نیک کردار ہیں ﴿16﴾ انسان اس بات سے مارا گیا کہ کس قدر ناشکرا ہو گیا ہے ﴿17﴾ کہ ان کے پاس ایک نا بینا آ گیا ﴿2﴾ اور تمھیں کیا معلوم شاید وہ پاکیزہ نفس ہو جاتا ﴿3﴾ اس نے منھ بسور لیا اور پیٹھ پھیر لی ﴿1﴾ آخر اسے کس چیز سے پیدا کیا ہے ﴿18﴾ اسے نطفہ سے پیدا کیا ہے پھر اس کا اندازہ مقرر کیا ہے ﴿19﴾ پھر اس کے لئے راستہ کو آسان کیا ہے ﴿20﴾ پھر اسے موت دے کر دفنا دیا ﴿21﴾ پھر جب چاہا دوبارہ زندہ کر کے اُٹھا لیا ﴿22﴾ ہرگز نہیں اس نے حکم خدا کو بالکل پورا نہیں کیا ہے ﴿23﴾ ذرا انسان اپنے کھانے کی طرف تو نگاہ کرے ﴿24﴾ بے شک ہم نے پانی برسایا ہے ﴿25﴾ پھر ہم نے زمین کو شگافتہ کیا ہے ﴿26﴾ پھر ہم نے اس میں سے دانے پیدا کئے ہیں ﴿27﴾ اور انگور اور ترکاریاں ﴿28﴾ اور زیتون اور کھجور ﴿29﴾ اور گھنے گھنے باغ ﴿30﴾ اور میوے اور چارہ ﴿31﴾ یہ سب تمہارے اور تمہارے جانوروں کے لئے سرمایہ حیات ہے ﴿32﴾ پھر جب کان کے پردے پھاڑنے والی قیامت آ جائے گی ﴿33﴾ جس دن انسان اپنے بھائی سے فرار کرے گا ﴿34﴾ اور ماں باپ سے بھی ﴿35﴾ اور بیوی اور اولاد سے بھی ﴿36﴾ اس دن ہر آدمی کی ایک خاص فکر ہو گی جو اس کے لئے کافی ہو گی ﴿37﴾ اس دن کچھ چہرے روشن ہوں گے ﴿38﴾ مسکراتے ہوئے کھلے ہوئے ﴿39﴾ اور کچھ چہرے غبار آلود ہوں گے ﴿40﴾ ان پر ذلّت چھائی ہوئی ہو گی ﴿41﴾ یہی لوگ حقیقتاً کافر اور فاجر ہوں گے ﴿42﴾