بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

إِذَا الشَّمْسُ كُوِّرَتْ ﴿1﴾ وَإِذَا النُّجُومُ انْكَدَرَتْ ﴿2﴾ وَإِذَا الْجِبَالُ سُيِّرَتْ ﴿3﴾ وَإِذَا الْعِشَارُ عُطِّلَتْ ﴿4﴾ وَإِذَا الْوُحُوشُ حُشِرَتْ ﴿5﴾ وَإِذَا الْبِحَارُ سُجِّرَتْ ﴿6﴾ وَإِذَا النُّفُوسُ زُوِّجَتْ ﴿7﴾ وَإِذَا الْمَوْءُودَةُ سُئِلَتْ ﴿8﴾ بِأَيِّ ذَنْبٍ قُتِلَتْ ﴿9﴾ وَإِذَا الصُّحُفُ نُشِرَتْ ﴿10﴾ وَإِذَا السَّمَاءُ كُشِطَتْ ﴿11﴾ وَإِذَا الْجَحِيمُ سُعِّرَتْ ﴿12﴾ وَإِذَا الْجَنَّةُ أُزْلِفَتْ ﴿13﴾ عَلِمَتْ نَفْسٌ مَا أَحْضَرَتْ ﴿14﴾ فَلَا أُقْسِمُ بِالْخُنَّسِ ﴿15﴾ الْجَوَارِ الْكُنَّسِ ﴿16﴾ وَاللَّيْلِ إِذَا عَسْعَسَ ﴿17﴾ وَالصُّبْحِ إِذَا تَنَفَّسَ ﴿18﴾ إِنَّهُ لَقَوْلُ رَسُولٍ كَرِيمٍ ﴿19﴾ ذِي قُوَّةٍ عِنْدَ ذِي الْعَرْشِ مَكِينٍ ﴿20﴾ مُطَاعٍ ثَمَّ أَمِينٍ ﴿21﴾ وَمَا صَاحِبُكُمْ بِمَجْنُونٍ ﴿22﴾ وَلَقَدْ رَآهُ بِالْأُفُقِ الْمُبِينِ ﴿23﴾ وَمَا هُوَ عَلَى الْغَيْبِ بِضَنِينٍ ﴿24﴾ وَمَا هُوَ بِقَوْلِ شَيْطَانٍ رَجِيمٍ ﴿25﴾ فَأَيْنَ تَذْهَبُونَ ﴿26﴾ إِنْ هُوَ إِلَّا ذِكْرٌ لِلْعَالَمِينَ ﴿27﴾ لِمَنْ شَاءَ مِنْكُمْ أَنْ يَسْتَقِيمَ ﴿28﴾ وَمَا تَشَاءُونَ إِلَّا أَنْ يَشَاءَ اللَّهُ رَبُّ الْعَالَمِينَ ﴿29﴾

عظیم اور دائمی رحمتوں والے خدا کے نام سے

جب چادر آفتاب کو لپیٹ دیا جائے گا ﴿1﴾ جب تارے گر پڑیں گے ﴿2﴾ جب پہاڑ حرکت میں آ جائیں گے ﴿3﴾ جب عنقریب جننے والی اونٹنیاں معطل کر دی جائیں گی ﴿4﴾ جب جانوروں کو اکٹھا کیا جائے گا ﴿5﴾ جب دریا بھڑک اٹھیں گے ﴿6﴾ جب روحوں کو جسموں سے جوڑ دیا جائے گا ﴿7﴾ اور جب زندہ درگور لڑکیوں کے بارے میں سوال کیا جائے گا ﴿8﴾ کہ انہیں کس گناہ میں مارا گیا ہے ﴿9﴾ اور جب نامہ اعمال منتشر کر دیئے جائیں گے ﴿10﴾ اور جب آسمان کا چھلکا اُتار دیا جائے گا ﴿11﴾ اور جب جہنمّ کی آگ بھڑکا دی جائے گی ﴿12﴾ اور جب جنّت قریب تر کر دی جائے گی ﴿13﴾ تب ہر نفس کو معلوم ہو گا کہ اس نے کیا حاضر کیا ہے ﴿14﴾ تو میں ان ستاروں کی قسم کھاتا ہوں جو پلٹ جانے والے ہیں ﴿15﴾ چلنے والے اور چھُپ جانے والے ہیں ﴿16﴾ اور رات کی قسم جب ختم ہونے کو آئے ﴿17﴾ اور صبح کی قسم جب سانس لینے لگے ﴿18﴾ بے شک یہ ایک معزز فرشتے کا بیان ہے ﴿19﴾ وہ صاحبِ قوت ہے اور صاحبِ عرش کی بارگاہ کا مکین ہے ﴿20﴾ وہ وہاں قابل اطاعت اور پھر امانت دار ہے ﴿21﴾ اور تمہارا ساتھی پیغمبر دیوانہ نہیں ہے ﴿22﴾ اور اس نے فرشتہ کو بلند اُفق پر دیکھا ہے ﴿23﴾ اور وہ غیب کے بارے میں بخیل نہیں ہے ﴿24﴾ اور یہ قرآن کسی شیطان رجیم کا قول نہیں ہے ﴿25﴾ تو تم کدھر چلے جا رہے ہو ﴿26﴾ یہ صرف عالمین کے لئے ایک نصیحت کا سامان ہے ﴿27﴾ جو تم میں سے سیدھا ہونا چاہے ﴿28﴾ اور تم لوگ کچھ نہیں چاہ سکتے مگر یہ کہ عالمین کا پروردگار خدا چاہے ﴿29﴾