بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

وَأَذِنَتْ لِرَبِّهَا وَحُقَّتْ ﴿5﴾ يَا أَيُّهَا الْإِنْسَانُ إِنَّكَ كَادِحٌ إِلَىٰ رَبِّكَ كَدْحًا فَمُلَاقِيهِ ﴿6﴾ فَأَمَّا مَنْ أُوتِيَ كِتَابَهُ بِيَمِينِهِ ﴿7﴾ فَسَوْفَ يُحَاسَبُ حِسَابًا يَسِيرًا ﴿8﴾ وَيَنْقَلِبُ إِلَىٰ أَهْلِهِ مَسْرُورًا ﴿9﴾ وَأَمَّا مَنْ أُوتِيَ كِتَابَهُ وَرَاءَ ظَهْرِهِ ﴿10﴾ فَسَوْفَ يَدْعُو ثُبُورًا ﴿11﴾ وَيَصْلَىٰ سَعِيرًا ﴿12﴾ إِنَّهُ كَانَ فِي أَهْلِهِ مَسْرُورًا ﴿13﴾ إِنَّهُ ظَنَّ أَنْ لَنْ يَحُورَ ﴿14﴾ بَلَىٰ إِنَّ رَبَّهُ كَانَ بِهِ بَصِيرًا ﴿15﴾ فَلَا أُقْسِمُ بِالشَّفَقِ ﴿16﴾ وَاللَّيْلِ وَمَا وَسَقَ ﴿17﴾ وَإِذَا الْأَرْضُ مُدَّتْ ﴿3﴾ وَأَلْقَتْ مَا فِيهَا وَتَخَلَّتْ ﴿4﴾ إِذَا السَّمَاءُ انْشَقَّتْ ﴿1﴾ وَأَذِنَتْ لِرَبِّهَا وَحُقَّتْ ﴿2﴾ وَالْقَمَرِ إِذَا اتَّسَقَ ﴿18﴾ لَتَرْكَبُنَّ طَبَقًا عَنْ طَبَقٍ ﴿19﴾ فَمَا لَهُمْ لَا يُؤْمِنُونَ ﴿20﴾ وَإِذَا قُرِئَ عَلَيْهِمُ الْقُرْآنُ لَا يَسْجُدُونَ ۩ ﴿21﴾ بَلِ الَّذِينَ كَفَرُوا يُكَذِّبُونَ ﴿22﴾ وَاللَّهُ أَعْلَمُ بِمَا يُوعُونَ ﴿23﴾ فَبَشِّرْهُمْ بِعَذَابٍ أَلِيمٍ ﴿24﴾ إِلَّا الَّذِينَ آمَنُوا وَعَمِلُوا الصَّالِحَاتِ لَهُمْ أَجْرٌ غَيْرُ مَمْنُونٍ ﴿25﴾

عظیم اور دائمی رحمتوں والے خدا کے نام سے

اور اپنے پروردگار کا حکم بجا لائے گی اور یہ ضروری بھی ہے ﴿5﴾ اے انسان تو اپنے پروردگار کی طرف جانے کی کوشش کر رہا ہے تو ایک دن اس کا سامنا کرے گا ﴿6﴾ پھر جس کو نامہ اعمال داہنے ہاتھ میں دیا جائے گا ﴿7﴾ اس کا حساب آسان ہو گا ﴿8﴾ اور وہ اپنے اہل کی طرف خوشی خوشی واپس آئے گا ﴿9﴾ اور جس کو نامہ اعمال پشت کی طرف سے دیا جائے گا ﴿10﴾ وہ عنقریب موت کی دعا کرے گا ﴿11﴾ اور جہنمّ کی آگ میں داخل ہو گا ﴿12﴾ یہ پہلے اپنے اہل و عیال میں بہت خوش تھا ﴿13﴾ اور اس کا خیال تھا کہ پلٹ کر خدا کی طرف نہیں جائے گا ﴿14﴾ ہاں اس کا پروردگار خوب دیکھنے والا ہے ﴿15﴾ میں شفق کی قسم کھا کر کہتا ہوں ﴿16﴾ اور رات اور جن چیزوں کو وہ ڈھانک لیتی ہے ان کی قسم ﴿17﴾ اور جب زمین برابر کر کے پھیلا دی جائے گی ﴿3﴾ اور وہ اپنے ذخیرے پھینک کر خالی ہو جائے گی ﴿4﴾ جب آسمان پھٹ جائے گا ﴿1﴾ اور اپنے پروردگار کا حکم بجا لائے گا اور یہ ضروری بھی ہے ﴿2﴾ اور چاند کی قسم جب وہ پورا ہو جائے ﴿18﴾ کہ تم ایک مصیبت کے بعد دوسری مصیبت میں مبتلا ہو گے ﴿19﴾ پھر انہیں کیا ہو گیا ہے کہ ایمان نہیں لے آتے ہیں ﴿20﴾ اور جب ان کے سامنے قرآن پڑھا جاتا ہے تو سجدہ نہیں کرتے ہیں ﴿21﴾ بلکہ کفاّر تو تکذیب بھی کرتے ہیں ﴿22﴾ اور اللہ خوب جانتا ہے جو یہ اپنے دلوں میں چھپائے ہوئے ہیں ﴿23﴾ اب آپ انہیں دردناک عذاب کی بشارت دے دیں ﴿24﴾ علاوہ صاحبانِ ایمان و عمل صالح کے کہ ان کے لئے نہ ختم ہونے والا اجر و ثواب ہے ﴿25﴾