بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ

تَصْلَىٰ نَارًا حَامِيَةً ﴿4﴾ تُسْقَىٰ مِنْ عَيْنٍ آنِيَةٍ ﴿5﴾ لَيْسَ لَهُمْ طَعَامٌ إِلَّا مِنْ ضَرِيعٍ ﴿6﴾ لَا يُسْمِنُ وَلَا يُغْنِي مِنْ جُوعٍ ﴿7﴾ وُجُوهٌ يَوْمَئِذٍ نَاعِمَةٌ ﴿8﴾ لِسَعْيِهَا رَاضِيَةٌ ﴿9﴾ فِي جَنَّةٍ عَالِيَةٍ ﴿10﴾ لَا تَسْمَعُ فِيهَا لَاغِيَةً ﴿11﴾ فِيهَا عَيْنٌ جَارِيَةٌ ﴿12﴾ فِيهَا سُرُرٌ مَرْفُوعَةٌ ﴿13﴾ وَأَكْوَابٌ مَوْضُوعَةٌ ﴿14﴾ وَنَمَارِقُ مَصْفُوفَةٌ ﴿15﴾ وَزَرَابِيُّ مَبْثُوثَةٌ ﴿16﴾ وُجُوهٌ يَوْمَئِذٍ خَاشِعَةٌ ﴿2﴾ عَامِلَةٌ نَاصِبَةٌ ﴿3﴾ هَلْ أَتَاكَ حَدِيثُ الْغَاشِيَةِ ﴿1﴾ أَفَلَا يَنْظُرُونَ إِلَى الْإِبِلِ كَيْفَ خُلِقَتْ ﴿17﴾ وَإِلَى السَّمَاءِ كَيْفَ رُفِعَتْ ﴿18﴾ وَإِلَى الْجِبَالِ كَيْفَ نُصِبَتْ ﴿19﴾ وَإِلَى الْأَرْضِ كَيْفَ سُطِحَتْ ﴿20﴾ فَذَكِّرْ إِنَّمَا أَنْتَ مُذَكِّرٌ ﴿21﴾ لَسْتَ عَلَيْهِمْ بِمُصَيْطِرٍ ﴿22﴾ إِلَّا مَنْ تَوَلَّىٰ وَكَفَرَ ﴿23﴾ فَيُعَذِّبُهُ اللَّهُ الْعَذَابَ الْأَكْبَرَ ﴿24﴾ إِنَّ إِلَيْنَا إِيَابَهُمْ ﴿25﴾ ثُمَّ إِنَّ عَلَيْنَا حِسَابَهُمْ ﴿26﴾

عظیم اور دائمی رحمتوں والے خدا کے نام سے

دہکتی ہوئی آگ میں داخل ہوں گے ﴿4﴾ انہیں کھولتے ہوئے پانی کے چشمہ سے سیراب کیا جائے گا ﴿5﴾ ان کے لئے کوئی کھانا سوائے خاردار جھاڑی کے نہ ہو گا ﴿6﴾ جو نہ موٹائی پیدا کر سکے اور نہ بھوک کے کام آ سکے ﴿7﴾ اور کچھ چہرے تر و تازہ ہوں گے ﴿8﴾ اپنی محنت و ریاضت سے خوش ﴿9﴾ بلند ترین جنت میں ﴿10﴾ جہاں کوئی لغو آواز نہ سنائی دے ﴿11﴾ وہاں چشمے جاری ہوں گے ﴿12﴾ وہاں اونچے اونچے تخت ہوں گے ﴿13﴾ اور اطراف میں رکھے ہوئے پیالے ہوں گے ﴿14﴾ اور قطار سے لگے ہوئے گاؤ تکیے ہوں گے ﴿15﴾ اور بچھی ہوئی بہترین مسندیں ہوں گی ﴿16﴾ اس دن بہت سے چہرے ذلیل اور رسوا ہوں گے ﴿2﴾ محنت کرنے والے تھکے ہوئے ﴿3﴾ کیا تمہیں ڈھانپ لینے والی قیامت کی بات معلوم ہے ﴿1﴾ کیا یہ لوگ اونٹ کی طرف نہیں دیکھتے ہیں کہ اسے کس طرح پیدا کیا گیا ہے ﴿17﴾ اور آسمان کو کس طرح بلند کیا گیا ہے ﴿18﴾ اور پہاڑ کو کس طرح نصب کیا گیا ہے ﴿19﴾ اور زمین کو کس طرح بچھایا گیا ہے ﴿20﴾ لہذا تم نصیحت کرتے رہو کہ تم صرف نصیحت کرنے والے ہو ﴿21﴾ تم ان پر مسلط اور ان کے ذمہ دار نہیں ہو ﴿22﴾ مگر جو منھ پھیر لے اور کافر ہو جائے ﴿23﴾ تو خدا اسے بہت بڑے عذاب میں مبتلا کرے گا ﴿24﴾ پھر ہماری ہی طرف ان سب کی بازگشت ہے ﴿25﴾ اور ہمارے ہی ذمہ ان سب کا حساب ہے ﴿26﴾